پیر - 6 فروری - 2023

آئی جی سندھ واقعہ انکوائری۔رینجرزافسران کو عہدوں سے ہٹادیا گیا

مزار قائد بیحرمتی کیس کے بعد کیپٹن (ر) صفدرکی گرفتاری اورآئی جی سندھ کے تحفظات کے حوالے سےکورٹ آف انکوائری کی سفارشات پر متعلقہ رینجرز افسران کو ذمے داریوں سے ہٹادیا گیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آئی جی سندھ کے واقعے کی فوج کی کورٹ آف انکوائری مکمل کرلی گئی ہے جوآرمی چیف کے حکم پرکی گئی۔

آئی ایس پی آرکا بتانا ہےکہ کورٹ آف انکوائری کی سفارشات پر متعلقہ افسران کو ذمے داریوں سے ہٹادیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آرکے مطابق ضابطہ کی خلاف ورزی پرافسران کے خلاف کارروائی جی ایچ کیو میں کی جائے گی۔

واقعے کا پسِ منظر

واضح رہے کہ مزار قائد پر نعرے بازی کے سلسلے میں مسلم لیگ (ن) کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کو 19 اکتوبر کو کراچی کے نجی ہوٹل سے گرفتار کیا گیا تھا اوران کی گرفتاری کے لیے آئی جی سندھ پر دباؤ ڈالے جانے کی خبریں موصول ہوئی تھیں۔

واقعے کے بعد آئی جی سندھ سمیت صوبے کے تمام اعلیٰ افسران نے احتجاجاً چھٹیوں پر جانے کا فیصلہ کیا تھا جب کہ بلاول بھٹو زرداری نے بھی اس حوالے سے تحفظات کا اظہارکیا تھا اورآرمی چیف سے نوٹس لینے کی اپیل کی تھی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کراچی واقعے پر بلاول بھٹو زرداری کو ٹیلی فون کیا تھا اور تحقیقات کی یقین دہانی کرائی تھی۔



Source link

یہ بھی چیک کریں

کالعدم تحریک طالبان نے جنگ بندی ختم کردی

پشاور:کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے یکطرفہ طورپرگذشتہ ایک ماہ سے جاری جنگ بندی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔