جمعرات - 2 فروری - 2023
"مری زمین ترے آسماں سے چھوٹی ہے"تحریر ادعیہ وہاج

آدم کی سرشت ہی نہ بدلی ، دنیا تو بدل چکی کئی بار.تحریر ادعیہ وہاج

آدم کی سرشت ہی نہ بدلی
دنیا تو بدل چکی کئی بار

شب و روز کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ لوگوں کو آہستہ آہستہ مایوسی کی طرف دھکیل رہا ہے اس بات سے انکار نہیں کے لوگ کرونا کے مرض سے گزرنے کے بعد صحت یاب نہیں ہورہے بلکہ صحت یاب ہونے والوں کی تعداد اموات کی شرح سے کہیں ذیادہ ہے مگر دن بدن کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ زہنی دباؤ کا سبب بن رہا ہے اس اثنا میں ہم سب کو اس بات سے بخوبی واقف ہو جانا چاہیے کہ زندگی کا ہر لمحہ ہر دن ہمیں بہت کچھ دیکھانا اور سیکھانا چاہتا ہے مگر ہم ہر گزرتے لمحے اپنی ذات میں گم زندگی کی حقیقت کو نظر انداز کرتے ہوۓ اپنی پسند نا پسند اور اپنے خود کردہ اصولوں پر عمل کرکے زندگی گزارتے رہتے ہیں اب جب کہ کئی ممالک کورونا کی وباء کے دلدل میں دھنس رہے ہیں تو ہر انسان پریشان حال اور خوف زدہ ہے۰ ہر ایک کی پریشانی کی نوعیت دوسرے سے الگ ہے ۰ کسی کو روزگار کی پریشانی تو کسی کو اس وباء سے بیمار اپنے پیارے کی موت کا غم ، کوئی سیر و تفریح بند ہو نے اور لاک ڈاؤن ہونے پر گھر میں بند ہو جانے سے پریشان ، کوئی اپنے پیاروں سے دور پردیس میں پھنس جانے کی وجہ سے ذہنی دباؤ میں ہے تو کوئی میچنگ ماسک نا ملنے پر پریشان غرض کہ اپنی حیثیت کے مطابق ہر کوئی ذہنی دباؤ کا شکار ہے۰ اب وقت ہے کہ کامیابی کی دوڑ میں ایک دوسرے کو دھکیلتے ہوۓ آگے بڑھنے کی تگ و دو کے بجاۓ ایک دوسرے کا ہاتھ تھام کر مل جل کر اس مشکل حالات کا مقابلہ کیا جاۓ ۰
عمدہ اخلاق اور حساس دل نعمتِ خداوندی ہے اور اس وقت پوری قوم جن حالات سے گزر رہی ہے تو کیا معلوم اس صورتحال میں ایک اچھی بات بھی سامنے والے کے لیے بہت بڑا حوصلہ ہو اور موجودہ حالات کے پیشِ نظر اس کی پریشانیوں کو کسی حد تک کم کرنے کے لیۓ معاون و مددگار ثابت ہو۰ تو کیوں اس مشکل وقت میں دل کی کدو رتوں کو بڑھا کر بدگمانیوں کے تحت نفرتوں کو پروان چڑھایا جاۓ۰ قرآن پاک میں کہا گیا ہے کہ اے ایمان والو! ایک قوم دوسری قوم سے ٹھٹھہ نہ کرے عجب نہیں کہ وہ ان سے بہتر ہوں اور نہ عورتیں دوسری عورتوں سے ٹھٹھا کریں کچھ بعید نہیں کہ وہ ان سے بہتر ہوں، اور ایک دوسرے کو طعنے نہ دو اور نہ ایک دوسرے کے نام دھرو، فسق کے نام لینے ایمان لانے کے بعد بہت برے ہیں، اور جو باز نہ آئیں سو وہی ظالم ہیں۔”
یہ وقت ہے ایک دوسرے کا خیال رکھنے کا ناکہ کسی کی ٹوہ میں لگ کر دل آزاری کی جاۓ۰ ہمیں مل کر اپنے اپنے حصے کا کام کرنا ہے، رب العزت نے اپنے کرم سے ہر انسان کو نوازا ہے کسی کو مال و زر کی صورت میں تو کسی کو عقل و فہم سے۰ اس مشکل گھڑی میں اپنی حیثیت کے مطابق اپنا اپنا حصہ ڈال کر ہم کو مل کر ایکدوسرے کا ساتھ دینا ہے کیا معلوم کب کون آپ سے بچھڑ جاۓ اور آپ کے ہاتھ صرف اور صرف زندگی بھر کے لیۓ افسوس باقی رہ جاۓ۔

یہ بھی چیک کریں

آزمائش میں کامیابی-

آزمائش میں کامیابی-محمد عرفان صدیقی

میں آدھے گھنٹے سے اس کے ڈرائنگ روم میں بیٹھا اس کا انتظار کررہا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔