اتوار - 2 اکتوبر - 2022

بچوں سے زیادتی کے مجرموں کوسرعام پھانسی دینے کی قراردادمنظور.فواد چوہدری کی اس قراداد کی مذمت،پیپلز پارٹی کی مخالفت.

اسلام آباد۔قومی اسمبلی میں بچوں سے زیادتی کے مجرم کی سرعام پھانسی کی قرارداد منظورہوگئی ہے۔یہ قراداد وزیر مملکت محمد علی خان کی طرف سے پیش کی گئی جس کے متن میں درج تھا کہ بچوں سے ذیادتی کے مجرم کو سر عام پھانسی کی سزا دی جائے۔یہ قرارداد کثرت رائے سے منظور ہوگئی ۔

اپوزیشن کی جماعت پیپلز پارٹی نے اس قرارداد کی مخلفت کی  پارٹی کے سینئر رہنما راجہ پرویز اشرف ے کہا ہے کہ پاکستان اقام متحدہ کے چارٹر پر دستخط کرچکا ہے دنیا اس فیصلے کو قبول نہیں کرے گی۔

وزیرمملکت نے ایوان کی راہداری میں میڈیا کو بتایا کہ اللہ نے اس قرارد کی منظوری میں مدد کی اور یہ قراراداد پاس ہوگئی۔اللہ تعالی چاہتا ہے کہ ہم اس ملک کو قرآن وسنت کے مطابق چلائیں۔

 حکمران جماعت کے وفاقی وزیر فواد چوہدری نے وزیر مملکت کی طرف سے پیش کی گئی قرار داد کی مذمت کی اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹ

ٹیوٹر پہ کہا کہ "سرعام پھانسی کے متعلق پیش کی گئیقرارداد کی مذمت کرتا ہوں ۔اس قسم کے قوانین تشدد پسند معاشروں میں بنتے ہیں معاشرے کو متوازن رہنا چاہئے بربریت کے ساتھ آپ جرائم کے خلاف نہیں لڑ سکتے۔ یہ انتہا پسندانہ سوچ کا عکاس ہے۔

یہ بھی چیک کریں

کالعدم تحریک طالبان نے جنگ بندی ختم کردی

پشاور:کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے یکطرفہ طورپرگذشتہ ایک ماہ سے جاری جنگ بندی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔