پیر - 3 اکتوبر - 2022

…..حسان امجد کی خوبصورت تحریر.زندگانی کی حقیقت کوہکن کے دل سے پوچھ

زندگی تمام چیلنجوں کا مقابلہ کرنے اور ان پر قابو پانے کے بارے میں ہے۔ ہم اپنی ساری زندگی جدوجہد کرتے ہوئے اور اس خاص منزل کو حاصل کرنے کی کوشش میں صرف کرتے ہیں جس سے ہم وابستہ ہوسکتے ہیں۔ لیکن ، اکثر ایسا خیال آتا ہے ، کیا سار

زندگی بھی اسی طرح گزر جائے گی ؟ہم بحیثیت انسان اس طرح کے ڈیزائن کیے گئے ہیں کہ ہم زیادہ دیر تک بیکار نہیں رہ سکتے کیونکہ یہ اللہ تعالیٰ کا حسن ہے کہ اس نے ہمیں زندگی کے دونوں مراحل اور راہوں سے نوازا۔ ہم دوسرے لفظوں میں ، مثبت یا منفی کے ساتھ چلنے کا انتخاب کرسکتے ہیں..آج چیزیں مشکل ہوسکتی ہیں ، ایسا لگتا ہے کہ سب کچھ آپ کے خلاف ہے اور کچھ کام نہیں کر رہا ہے لیکن میرے دوست ہمیشہ یاد رکھو کہ سرنگ کے اختتام پر ہمیشہ روشنی ہوتی ہے اور آپ کو اس تک پہنچنا ہوگا۔ ایک انچ کی حرکت کیے بغیر آپ اپنی منزل نہیں پہنچ سکتے۔نا موافق حالات کو موافقت میں تبدیل کر پانا ہی ترقی کہلاتا ہے۔

خواہشات کچھ مشکلات لیتی ہیں. منزلوں کے حصول کہ لیئے مشکلات کا سامن کرنا پڑتا ہے..ہمیشہ یقین رکھیں کہ آپ زندگی میں کچھ بھی کر سکتے ہیں گویا آپ کا مستقبل ڈیزائن کرلیا ہوتا تو یہ زندگی بے معانی ہو جاتی۔ توکل رکھو تو خوشگوارلمحے مزید خوشگوار ہوجاتے ہیں جب آپ کسی مشکل مراحل سے گزرے ہوں تو ہی آپ ِان لمحات کو ُکھل کر محسوس کرتے ہیں تب ہی زندگی کے آصل ادوار سے انسان واقف ہوتا ہے آپ نے کبھی ان خوشگوار لمحوں کو دیکھنے کی کوشش کی ہے ، ایسا کیوں ہے؟ کیونکہ پھل ملنے پر کی گیئی  جدوجہد اور محنت کرنے کے بعد ، آپ ہمیشہ اس نعمت کی قدر کرتے ہیں۔ لہذا ، یہ سوچنہ کے میرے ہونے نہ ہونے سے کوئی فرق نہی پڑتا سرا سر حماکت سے زیادہ کچھ نہی.اِک عمارت میں  کئ  پلرزہوتے ہیں جو کہ عمارت کو مضبوطی سے کھرآ رکھتے ہیں. ہر اک پلر کی اہمیت دوسرے کے سی ہے آگرچہ اک کے کمزور پڑنے پر سارہ بوجھ دوسرے پر پڑھ جاتا ہے لہذہ یاد رکھیں آپنا موازنہ کبھی کسی دوسرے سے نہ کریں کیا پتہ دوسرا اِس مقام پر کن کن مشکلات کا سامناں کر چکا ہو..آپنی قدر کرنا سیکھں اور کبھی بھی کسے دوسرے کی کامیابی کو شارٹ کٹ سے تشبیہ نہ دیں بلکے کسی کی کامیابی کو تسلیم کرنے سے آپ آپکو اِک قابل ستائش شخصیت ثابت کریں.

گفتگو کو سمیٹتے ہوئے اِتنا کہو گا کہ ہر اِک دوسرے سے مختلف ہے خواہ وہ خواہشات کی بت ہو، منزل ہو یا اور کچھ لہذہ آپنا اِک مقام بنائے نہ کہ کسی اور کو دیکھتے ہوئے اُس کے پیچہے پیچے چلیں۔

فں آمان اللہ

یہ بھی چیک کریں

آزمائش میں کامیابی-

آزمائش میں کامیابی-محمد عرفان صدیقی

میں آدھے گھنٹے سے اس کے ڈرائنگ روم میں بیٹھا اس کا انتظار کررہا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔