پیر - 6 فروری - 2023

رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران غیر ملکی کمپنیوں کی جانب سے منافع جات کی منتقلی میں 65.1فیصد اضافہ



اسلام آباد۔11نومبر (اے پی پی):رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران غیر ملکی کمپنیوں (ایم این سیز) کی جانب سے منافع جات کی منتقلی میں 65.1فیصد اضافہ ہواہے ۔ جولائی تا ستمبر2020 کے دوران ملیٹی نیشنل کمپنیوں نے 576.8 ملین ڈالر کے منافع جات بیرون ملک منتقل کئے ہیں۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال میں جولائی تا ستمبر 2019 کے دوران ایم این سیز کی جانب سے 349.2 ملین ڈالر کےمنافع جات بیرون ملک منتقل کئے گئے تھے۔ اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں جاری مالی سا ل کی پہلی سہ ماہی کے دوران ایم این سیز کی جانب سے منافع جات کی بیرون ملک منتقلی میں 227.6 ملین ڈالر یعنی 65 فیصد سے زیادہ کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ایس بی پی کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے پہلے تین ماہ میں ملٹی نیشنل کمپنیوںکی جانب سے منافع جات کی منتقلی میں اضافہ کے بنیادی اسباب میں بہتر منافع، کاروباری ماحول اور سرمایہ کاروں کے اعتماد کی بحالی وغیرہ شامل ہیں۔ ایس بی پی کے مطابق ستمبر 2020 کے دوران 169.2 ملین ڈالر کے منافع جات منتقل کئے گئے ہیں۔ مزید برآں جولائی تا ستمبر 2020 کے دوران براہ رست غیر ملکی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے 559 ملین ڈالر کے منافع جات کی بیرو ن ملک منتقلی ہوئی ہے جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ میں ایف ڈی آئی سے حاصل 328.9 ملین ڈالر کے منافع جات بیرون ملک منتقل کئے گئے تھے۔ ایس بی پی کے مطابق جولائی تا ستمبر 2020 میں پاکستان سٹاک ایکسچینج میں سرمایہ کاری سے حاصل 17.8 ملین ڈالر، فوڈ سیکٹر سے 152.2 ملین ڈالر، مواصلات کے شعبہ سے 118.7 ملین ڈالر اور فنانشل سیکٹر سے حاصل 90.1 ملین ڈالر کے منافع جات بیرون ملک منتقل کئے گئے ہیں۔




Source link

یہ بھی چیک کریں

ملک میں ہفتہ واربنیادوں پرمہنگائی کی شرح میں گزشتہ ہفتہ کے دوران 0.07 فیصدکی کمی ریکارڈ، 9 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی اور23 کی قیمتوں میں استحکام رہا

اسلام آباد۔10دسمبر (اے پی پی):ملک میں ہفتہ واربنیادوں پرمہنگائی کی شرح میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔