منگل - 31 جنوری - 2023

وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام کا زرعی مصنوعات کی خصوصی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں اظہارخیال



اسلام آباد ۔ 17 جون (اے پی پی) وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام نے کہا ہے کے صوبوں کے ساتھ کھاد پر زرتلافی پیکج پر عمل درآمد کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے، پی آئی اے نے آم کی برآمد کے لیے نہایت مناسب فریٹ ریٹ رکھا ہے،رواں سیزن کے دوران 4ہزار ٹن آم برآمد کیا جا چکا ہے، کسانوں کی سہولت کے لیے کھاد پر سبسڈی دی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس میں زرعی مصنوعات کی خصوصی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کے دوران کیا۔ اجلاس کی صدارت اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کی۔وفاقی وزیر سید فخر امام نے کہا کہ زرعی پیکج کے تحت کسانوں کوکھاد پر زرتلافی دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں صوبوں اور کھاد کے مینوفیکچررز کے ساتھ 2 میٹنگز کی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہر صوبہ شفاف طریقہ کار بنائے جس کے ذریعے کسانوں کو کھادوں کی خریداری پر37 ارب روپے کی سبسڈی دی جائے گی۔انہوں نے وفاقی وزیر غلام سرور خان اور پی آئی اے کا شکریہ ادا کیا کہ آم کی برآمد کے لیے نہایت مناسب فریٹ ریٹ رکھے گئے ہیں انہوں نے کہا کہ آم کو زمینی راستہ سے ایران برآمد کرنے کے لیے ہر ممکنہ سہولیات فراہم کی جائیں۔وفاقی وزیر نے کہا کہ گزشتہ سال 28 ہزار ٹن آم برآمد کیا گیا جبکہ اس سال ابھی تک 4 ہزار ٹن آم برآمد کیا گیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ برآمدات کو اس سال زیادہ سے زیادہ بڑھایا جائیگاوفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ٹیوب ویل کو شمسی توانائی پر لے جانے کے لیے وزارت قومی غذائی تحفظ فزییلیٹی بنائیگی۔




Source link

یہ بھی چیک کریں

ملک میں ہفتہ واربنیادوں پرمہنگائی کی شرح میں گزشتہ ہفتہ کے دوران 0.07 فیصدکی کمی ریکارڈ، 9 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی اور23 کی قیمتوں میں استحکام رہا

اسلام آباد۔10دسمبر (اے پی پی):ملک میں ہفتہ واربنیادوں پرمہنگائی کی شرح میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔