منگل - 4 اکتوبر - 2022

پشاور۔ضلع خیبر سے ملحقہ پشاور کے علاقہ زگئی غر میں قانون نافذ کرنیوالے اداروں کیساتھ مبینہ مقابلہ کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار

پشاور۔ضلع خیبر سے ملحقہ پشاور کے علاقہ زگئی غر میں قانون نافذ کرنیوالے اداروں کیساتھ مبینہ مقابلہ کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کرلی گئی جس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مقابلے سے کے روز افغانستان سے 10سے 12 دہشتگردوں کی تشکیل ہوئی تھی تشکیل کے اہداف میں پشاور ٗ چارسدہ ٗ مہمند اور ضلع ملاکنڈ میں پولیس اور دیگر سکیورٹی فورسز کے مراکز شامل تھے جن کا منصوبہ ناکام بنایاگیا ہے پشاور میں مارے گئے دہشتگردوں کے قبضے سے ایس ایم جیز ٗ3 خودکش جیکٹس ٗ2 پستول ٗ 2 ہینڈ گرینڈ ٗ 2 خنجر اور 1 وائرس سیٹ برآمد کیاگیا واضح رہے کہ جمعہ کی شب تھانہ ریگی کی حدود زگئی غر میں مطلوب دہشت گرد منان عرف منانے کی موجودگی کی اطلاع پر محکمہ انسداد دہشت گردی اور حساس اداروں نے انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن کیا روزنامہ آج کے مطابق اس دوران منان نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ قانون نافذ کرنے والے اداروں پر فائرکھول دیا واقعے کی اطلاع ملنے پر مزید نفری جائے وقوعہ پر پہنچی جنہوں نے پورے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اس دوران مبینہ فائرنگ تبادلے میں منانے اپنے دیگر 4ساتھیوں سمیت مارا گیاجن کی شناخت نیاز علی ولد سیف الرحمن ساکن برکندے بڈھنی، عدنان ولد اسماعیل خان ساکن مختار خیل لنڈی کوتل، خودکش بمبار جمیل احمد ولد گل سرزمین ساکن ڈوگدرہ اپر دیر اورعزیز اللہ ولد شعیب خان ساکن درگئی ملاکنڈکے ناموں سے ہوئی۔دوسر ی جانب قانون نافذ کرنیوالوں کے مطابق 5دہشتگردوں کو ٹھکانے لگادیا ہے جبکہ دیگر رات کی تاریکی فائدہ اٹھاتے ہوئے موقع سے فرار ہوگئے۔ مارے گئے دہشتگردوں کی نعشیں ورثاء کے حوالے کردی گئی ہیں ذرائع کے مطابق مقابلے کے فوراً بعد مارے گئے دہشتگردوں کی جامہ تلاشی لی گئی توان قبضے سے شناختی کارڈ اور دیگر دستاویزات بھی برآمد ہوئے تاہم نعشیں قبضے میں لیکر مردہ خانہ منتقل کی گئیں جس کے بعد ورثاء کو اطلا ع کرکے کاغذی کاروائی کے بعد نعشیں ان کے حوالے کردی گئیں جو آبائی علاقے پہنچا دی گئی ہیں۔

یہ بھی چیک کریں

پنوعاقل:ا نوجوان شہر آتے ہوئے پراسرار طور پر لاپتہ، موبائل فون بند، ورثا کی جانب سے اغواہ کا شک.

پنوعاقل:ا نوجوان شہر آتے ہوئے پراسرار طور پر لاپتہ، موبائل فون بند، ورثا کی جانب سے اغواہ کا شک

پنوعاقل(رپورٹ عبدالواحد گھوٹو) دادلو تھانہ کی حدود میں قومی شاہراہ پر واقع گاؤں عزت خان …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔