جمعرات - 2 فروری - 2023
چین کے ساتھ تنازعہ:گلوان میں بھارت کی تاریخی ہزیمت

چین کے ساتھ تنازعہ:گلوان میں بھارت کی تاریخی ہزیمت

ولید بن مشتاق ۔۔۔
گلوان میں تاریخی ہزہمت ۔ بھارتی فوج اور مودی سرکار کا جھوٹ بے نقاب۔ سرجیکل اسٹرائیکس کا دعوے دار دہشتگرد بھارت اپنوں میں ہی رسوا ہو گیا۔
ہندوتوا نظریہ پر عمل پیرا اکھنڈ بھارت کو ہر محاز پر رسوائی کا سامنا ہے ۔ کبھی پلوامہ کا بہانہ کبھی سرجیکل اسٹرائیکس کا دعوے دار اکھنڈ بھارت اپنوں میں ہی رسوا ہو گیا ۔چین کے ہاتھوں تاریخی ہزیمت، اور جھوٹے بیانات پر بھارتی عوام اور صحافی مودی اور جنرل بپن راوت پر پھٹ پڑے۔ لداخ میں بھارتی فوج کی زلت آمیز شکست پر عوام اور بھارتی فوج کا مورال پست۔ہندوستانی صحافی عنبرین زیدی نے چیف آف ڈیفنس سٹاف جنرل بپن راوت کے نام خط لکھ کر کئی تاریخی اور چبھتے سوالات اٹھا دیے۔ہندوستانی صحافی نے کاچیف آف ڈیفنس سٹاف جنرل بپن راوت کے نام کھلے خط میں کہا ہم جاننا چاہتے ہیں، وادی گلوان میں کیا ہوا؟ اگر چین نے مداخلت نہیں تو کمانڈنگ آفیسر سمیت بہت سا جانی نقصان کیسے ہوا؟ بھارتی صحافی نے استفسار کیا کہ لداخ واقعہ پر روزانہ بیانات کو نیا رخ کیوں دیتے ہیں؟ کیا ہمیں کبھی حقیقت معلوم ہوگی؟ کیا ہمارے فوجی اپنے ہی کھودے گڑھے میں جا گرے؟ ہمارے فوجی توپ کا چارہ نہیں، انہیں سفارتی فوائد کیلئے وحشیانہ موت کے گھاٹ نہیں اتارا جا سکتا؟۔بھارتی صحافی نے جنرل بپن پر کڑی تنقید کرتے ہوئے لکھا کہ چینی فوج شاید پاگل ہو گی لیکن آپ شاید زیادہ ہیں؟ چیف آف ڈیفنس اسٹاف کا عہدہ یہ کہہ کر تشکیل دیا گیا کہ بری فوج، بحریہ اور فضائیہ ایک چھتری تلے ہوں گے۔ آپ کی مداخلت کے باعث ہندوستانی مسلح افواج کے ارکان کے حوصلے پست ہیں۔راہداریوں میں سرگوشیاں، چیخیں ہیں کہ مستقبل میں ہمارے فوجیوں کو ایسے شرمناک واقعات میں کون بچائے گا؟ ہم نے اپنے فوجیوں کو غیرپیشہ وارانہ انداز میں کھویا۔لداخ واقعہ اور فوجی ہلاکتوں پر پردے پر پردے ڈالے گئے۔ھارتی صحافی نے جنرل راوت کی کلاس لیتے ہوئے لکھا کہ ہندوستانی فوجیوں کا خون سیاسی فیصلہ سازوں اور آپ کے ہاتھوں پر ہے۔ ایک طاقتور گارڈ فادر (مودی) نے آپ کو تحفظ، ترقی دی، دوسرے افسران کو تنزلی۔ آپ کو جو ذمہ داریاں، مراعات دی گئیں، آپ نے انصاف کیا؟ – کیا آپ فوج میں موجود اپنے بھائیوں کے لئے کھڑے ہوئے؟ بھارتی صحافی نے خط میں لکھا کیا جنرل بپن آپ اخلاقی بنیادوں پر استعفیٰ دینے کو تیار ہیں؟ ۔آپ اس بات کو یقینی بنائیں کہ فوجیوں کو دھوکہ نہ دیں۔انہیں بغیر اسلحہ جانے اور بغیر ہتھیار لڑنے کا نہ کہا جائے۔ہم نہیں چاہتے کہ ہمارے فوجیوں کیساتھ ایسا ہو جیسا چین نے کیا۔ لداخ میں چین سے ہزیمت اٹھانے کے بعد بھارتی فوج کا مورال پست ۔عوام میں شدید غم وغصہ پایاجاتا ہے ، بھارت کی جانب سے متضاد بیانات ست عوام سے سچ چھپانے کی مزموم کوششیں ناکام ہو گئی۔ سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیوز اور تصاویر نے سارا ماجرہ کھل کر بیان کر دیا کے کیسے چین نے بھارتی وک ناکوں چنے چھبوائے ۔ کشمیر میں ظلم و ستم کے پہاڑ تورٹے والی بھارتی فوج اور مودی سرکار اپنی ہی ملک میں ہدف تنقید ہے اور اپنے جھوٹ کا دفاع کرنے میں ناکام ہے ۔ بھارت کو ہر محاز پر شکست کا سامنا ہے نیپال ہو یا لداخ مودی سرکار کے حصے میں بس رسوائی ہی آئی ۔ فروری میں پاکستان مہمان نوازی اور بھارتی پائلٹ کا چائے از فنٹاسٹک تو بھارت کو یاد ہی ہو گا لیکن ا س کے علاوہ بھی بھارت کی ہر چال ناکام ہونا اس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ مودی سرکار اور ہندتوا نظریہ دہشتگرد بھارت کونہ صرف مہنگا پڑھ رہاہے بلکہ آنے والے دنوں میں کسی بھی حماقت کی صورت میں بھارت کے ٹکڑے ٹکڑے بھی کر دے گا ۔ بھارت کو یہ واضح طور پر سمجھ لینا چاہیے کہ منفی پراپیگنڈہ ، دہشتگردانہ عزائم اور لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزیاں بھارت کو بہت مہنگی پڑنے والی ہیں یہی نہیں بلکہ آر ایس ایس کے غنڈے اور دہشتگرد نریندر مودی کا اصل چہرہ بھی دنیا کے سامنے بے نقاب ہو چکا ہے ۔

یہ بھی چیک کریں

تشیع الفاحشہ-تحریر-افشاں نوید

تشیع الفاحشہ-تحریر-افشاں نوید

تشیع الفاحشہ پاکستان بھر کے چینلز کی میڈیا ٹیمیں موٹر وے پہنچی پوئی ہیں۔ پروگرام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔