منگل - 4 اکتوبر - 2022

کورنا وائرس کا خدشہ۔۔ ہزارہ ڈویژن میں جزوی طور پر لاک ڈاون۔۔ بالاکوٹ،مانسہرہ،شنکیاری،ایبٹ آباد میں بازار بند۔دفعہ144 ناٖفذ۔۔

رپورٹ ولید بن مشتاق
پاکستان میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز سے ملک بھر میں ایمرجنسی کی سی صورت حال ہے ۔ وفاق اور صوبائی سطح پر حکومتوں کی جانب سے مختلف لائحہ عمل اپنائے جا رہے ہیں تاکہ وائرس کے پھیلاو کو روکا جا سکے ۔خیبر پختونخواہ میں کورونا وائرس کے اب تک 31 کنفرم کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔ہزارہ ڈویژن میں ابھی تک کنفرم کورونا کیسز کی تعداد صفر ہے تاہم مشتبہ مریضوں کا کوئی ڈیٹا مرتب نہیں ہو سکا ۔ذرائع کے مطابق ہزارہ ڈویژن کے سب سے بڑے میڈیکل سینٹر ایوب میڈیکل کمپلیکس میں اب تک کورونا وائرس کے گیارہ مشتبہ لائے گے ہیں جن میں سات مریضوں کے ٹیسٹ منفی آنے پر اسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے جبکہ بقیہ چار مریضوں کے ٹیسٹ رپورٹس کا انتظار ہے ۔ ان مریضوں کے نمونے اسلام آباد نیشنل لیبارٹری بھجوا ئے گئے ہیں ۔ہزارہ ڈویژن کے 5 اضلاع میں ابھی تک کورونا وائرس کا کوئی کنفرم کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے حفاظتی اقدامات کے طور پر دفعہ144 کا نٖفاز کیا جا رہا ہے ۔ ہر قسم کے چھوٹے بڑے اجتماعات ، شادی بیاہ کی تقریبات پر پابندی عائد ہے ۔ تاجر برادری کی جانب سے بھی رضاکارانہ طور پر ڈویژن میں دکانیں مارکیٹیں اور مال بند رکھے گئے ہیں تاہم اشیاء ضروریہ کی دکانیں کھلی ہے ۔ اسکول، کالجز ،یونیورسٹیاں اور مدرسے پہلی ہی حکومتی کی جانب سے اعلان کے بعد بند ہیں۔ بالاکوٹ ، مانسہرہ، شنکیاری، ایبٹ آباد، اور ہری پور میں جزوی طور پر لاک ڈاون ہے ۔ صوبائی حکومت کا کہنا ہے کہ ابھی صوبہ خیبر پختونخواہ میں مکمل لاک ڈاون بارے فیصلہ نہیں کیا گیا تاہم جزوی طور پر جم غفیر کم کرنے کیلئے اقدامات کیے جا رہے ہیں ۔ صوبہ بھر کے تما م سیاحتی مقامات کوبھی بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اشیاء ضروریہ کی قیمتوں کی فراہمی اور قلت کے حوالے سے ڈیلی ویب کے سوال پرصوبائی حکومت کے نمائندہ کا کہنا تھا کہ اشیاء ضروریہ کی بلا تعطعل فراہمی یقینی بنائی جا رہی ہے ۔سڑکوں پر ٹرانسپورٹ بھی رواں رہے گی تاکہ صوبہ بھر میں اشیاء ضروریہ کی قلت پیدا نہ ہو۔حکام کا مزید کہنا تھا کہ صوبہ میں صورتحال کنٹرول میں ہے تاہم شہریوں کو حفاظتی اقدامات پر سختی سے عمل کرنا چاہیے تاکہ کسی سنگین صورتحال کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

یہ بھی چیک کریں

کالعدم تحریک طالبان نے جنگ بندی ختم کردی

پشاور:کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے یکطرفہ طورپرگذشتہ ایک ماہ سے جاری جنگ بندی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔