ہفتہ - 23 اکتوبر - 2021

بھارتی حکومت کامکروہ چہرہ بےنقاب،مقتولہ لڑکی کےاہلخانہ گھر میں قید

بھارتی ریاست اترپردیش کے علاقے ہاتھرس میں 19 سالہ لڑکی کے ساتھ گینگ ریپ اور قتل کےبعد بھارتی پولیس نے ملزمان کیخلاف کارروائی کے بجائے متاثرہ خاندان کو پولیس نے گھر میں نظر بند کردیا،یہی نہیں بلکہ مقتولہ کے اہل خانہ موبائل فون چھین لئےتاکہ وہ میڈیا سے رابطہ نہ کرسکیں جبکہ اعتراض کرنے پر انہیں تشدد کا بھی نشانہ بنایا گیا ۔
بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق پولیس نے مقتولہ کے گھر کا محاصرہ کرلیا اور کسی کو بھی اندر جانے کی یا باہر آنے کی اجازت نہیں دی جا رہی ہے۔ صوبائی حکومت کے حکم کے بعد پولیس نے مقتولہ لڑکی کے گاؤں جانے والے سارے راستے کو بند کردیا ، میڈیا اور سیاسی پارٹیوں کے کارکنوں کو بھی جانے سے روکا جارہا ہے۔
ادھر بھارتی حکام نے اجتماعی مقتولہ دلت لڑکی کے والدین کو دھمکیاں دینا شروع کردیں جبکہ لڑکی کے والدین کو دھمکانے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جس میں ڈی ایم متاثرہ لڑکی کے باپ کو دھمکی دے رہا ہے کہ آدھےمیڈیا والے چلےگئےباقی بھی چلے جائیں گے صرف ہم ہی آپ کے ساتھ کھڑے ہیں
اس ویڈیو کے وائرل ہونےبعد ریاست میں دوبارہ احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے اور دیگر علاقے کے ساتھ ساتھ نئی دہلی بھی مظاہروں اور احتجاجوں کا مرکز بن گیا ۔ مہاتماگاندھی کے یوم پیدائش کے موقع پر اس واقعہ کے خلاف دہلی کے انڈیا گیٹ پر مظاہرہ کی اپیل کی گئی ہے،ادھر حکام نے نئی دہلی میں آج سے دفعہ 144 نافذ کردی۔

The post بھارتی حکومت کامکروہ چہرہ بےنقاب،مقتولہ لڑکی کےاہلخانہ گھر میں قید appeared first on Din News Tv.

Source link

یہ بھی چیک کریں

بیلجیئم کی آرٹسٹ بادشاہ البرٹ دوئم کی بیٹی ثابت

بیلجیئم کی عدالت نے ڈی این اے ٹیسٹ کے ذریعے بادشاہ کی بیٹی ثابت ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے