ہفتہ - 23 اکتوبر - 2021
پنوعاقل: اسسٹنٹ کمشنر اور مختیار کار کی عملہ کے ہمراہ مشترکہ کارروائی ایس او پیز کی خلاف ورزی پر دو ہوٹل سیل

پنوعاقل: اسسٹنٹ کمشنر اور مختیار کار کی عملہ کے ہمراہ مشترکہ کارروائی ایس او پیز کی خلاف ورزی پر دو ہوٹل سیل

پنوعاقل(رپورٹ عبدالواحد گھوٹو) اسسٹنٹ کمشنر اور مختیار کار کی عملہ کے ہمراہ مشترکہ کارروائی ایس او پیز کی خلاف ورزی پر دو ہوٹل سیل، بھاری جرمانے
تفصیلات کے مطابق پنوعاقل شہر میں سندھ حکومت کی جانب سے ایس او پیز کی کھلم کھلا خلاف ورزی کی شکایات اور ڈپٹی کمشنر سکھر کی خصوصی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر پنوعاقل مولا داد درانی مختیار کار پنوعاقل شاہنواز چارن نے عملے کے ہمراہ ماشاء الله پیٹرول پمپ کے سامنے قومی شاہراہ پر واقع مشہور جسٹ چل ہوٹل کے مالک کی جانب سے ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر بھاری جرمانہ عائد کیا گیا ہے اور مکمل طور پر سیل کردیا گیا ہے دوسری جانب بائیجی چوک کے قریب قومی شاہراہ پر واقع ڈولفن ہوٹل مالک کی جانب سے ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر بھاری جرمانہ عائد کرکے وصول کرنے کے بعد مذکورہ ہوٹل کو مکمل طور پر سیل کردیا گیا ہے ماشاء پیٹرول پمپ پر قائم ہوٹل مالک کو بھی ایس او پیز کی خلاف ورزی پر فائن عائد کرکے وارننگ دی گئی ہے پنوعاقل کی سیاسی سماجی و مذہبی تنظیموں کے رہنماؤں ڈاکٹر مشتاق عباسی، عنایت الله آرائیں، امداد مہر، شاہد جتوئی و دیگر شہریوں نے اسسٹنٹ کمشنر کی کارروائی کو سراہتے ہوئے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ کارروائی نیک نیتی کی بنیاد پر نہیں کی گئی من پسند ہوٹلوں کو ٹارگٹ کیا گیا ہے جسٹ چل ہوٹل کے برابر میں ایک نام نہاد ہوٹل مالک کو سیاسی سپورٹ حاصل ہونے کے سبب سرعام چل رہا ہے اس کے علاوہ سٹی میں بھی بااثر سیاسی اثر رسوخ رکھنے والے عناصروں کے سرعام ہوٹل چل رہے ہیں جہاں پر کھلم کھلا ایس او پیز کی خلاف ورزی ہو رہی ہے وہاں پر انتظامیہ کارروائی کرنے سے گریزاں ہے.

یہ بھی چیک کریں

پنوعاقل: یوٹیلیٹی اسٹوروں پر سرعام سامان فروخت ہونے لگا، عوام پریشان غریب گھرانوں کی عورتیں انتظار کرنے لگی، اعلی حکام سے کارروائی کا مطالبہ

پنوعاقل: یوٹیلیٹی اسٹوروں پر سرعام سامان فروخت ہونے لگا، عوام پریشان غریب گھرانوں کی عورتیں انتظار کرنے لگی، اعلی حکام سے کارروائی کا مطالبہ

پنوعاقل(نامہ نگار)تفصیلات کے مطابق پنوعاقل سٹی میں موجود یوٹیلیٹی اسٹوروں پر سرعام سامان فروخت ہورہا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے